44

انوراگ پر ہراسانی کے الزامات، تاپسی حق میں سامنے آ گئیں

جنسی ہراسانی کے الزامات میں گھرے بھارتی ہدایتکار انوراگ کشیپ کے حق میں بھارتی اداکارہ تاپسی پنو سامنے آ گئی ہیں۔

بھارتی انڈسٹری میں ہدایتکار انوراگ کشیپ اور اداکارہ تاپسی پنو کی دوستی کے چرچے تو ہر زبان زد عام ہیں، دونوں ایک دوسرے کے بہت قریبی دوست مانے جاتے ہیں۔

تاپسی پنو کی جانب سے اپنے دوست انوراگ پر لگائے گئے جنسی ہراسانی سے متعلق بیان سامنے آ یا جس میں اُن کا کہنا ہے کہ ’وہ انوراگ کشیپ پر لگنے والے سب ہی الزامات مسترد کرتی ہیں، انوراگ کشیپ خواتین کی بہت عزت کرتے ہیں، اگر انوراگ پر لگنے والے الزامات ثابت ہو گئے تو وہ انوراگ کے ساتھ سائن کیے ہوئے سارے پروجیکٹ ختم کر دیں گی۔‘

بھارتی ویب سائٹ ’ ٹائمز آف انڈیا ‘ کے مطابق بھارتی اداکارہ تاپسی پنو نے اپنے قریبی دوست اور ہدایتکار انوراگ کشیپ پر بھارتی اداکارہ پائل گھوش کی جانب سے لگائے گئے جنسی ہراسانی کے الزامات سے متعلق انٹرویو کے دوران کہا ہے کہ انوراگ خواتین کی بہت عزت کرتے ہیں، انوراگ نے کبھی کسی خواتین کے لیے غلط زبان تک استعمال نہیں کی ہے اور انوراگ عوام میں بھی اچھی شہرت رکھتے ہیں ۔

تاپسی پنو کا مزید کہنا ہے کہ ’انوراگ اُن چند ایک ڈائریکٹرز میں سے ایک ہیں جن کی ٹیم اور سیٹ پر موجود عملے میں خواتین اور مردوں کو یکساں مواقع فراہم کیے جاتے ہیں، انوراگ خواتین اور مردوں کے درمیان فرق بھی نہیں رکھتے ہیں۔‘

انہوں نے مزید کہا ہے کہ انوراگ سے متعلق اُن کے عملے میں بھی اُن سے متعلق مثبت رائے پائی ہے۔

تاپسی نے کہا ہے کہ اگر کوئی ہراسانی کا شکار ہوا ہے تو اس کے لیے انویسٹیگیشن ہونی چاہیے اور حقیقت سامنے آنی چایئے۔

واضح رہے کہ بھارتی فلم انڈسٹری سے تعلق ر کھنے والی اداکارہ گھوشال پائل نے ممبئی کے ایک پولیس اسٹیشن میں ہدایتکار انوراگ کشیپ کے خلاف شکایت درج کروائی ہے جس میں پائل گھوشال کا کہنا ہے کہ انوراگ کی جانب سے اُنہیں کے ساتھ بد زبانی کی اور جنسی طور پر ہراساں کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں