44

فرانسیسی صدراور حکومت فرانس کی جانب سے گستاخانہ خاکے شائع کرنے کے خلاف مذمتی قراداد پنجاب اسمبلی میں جمع

لاہور: فرانسیسی صدراور حکومت فرانس کی جانب سے گستاخانہ خاکے شائع کرنے کے خلاف مذمتی قراداد پنجاب اسمبلی میں جمع کروادی گئی ۔مسلم لیگ(ن)کے ارکین اسمبلی میاں عبدالرف ، عنیزہ فاطمہ،محمد ارشد ملک، سنبل مالک حیسن کی جانب سے جمع کرائی گئی قرار داد کے متن میں کہاگیا ہے کہ مسلمان پر امن قوم ہیں مگر ان کی غیرت کو للکارا جا رہا ہے۔
ساری مسلم امہ فرانسیسی صدر کی گستاخانہ حرکتوں پر ان کے منہ پر لعنت بھیجتی ہے۔ فرانسیسی صدر کے حکم پر گستاخانہ خاکے جاری کرنے پر پوری دنیا کے مسلمانوں کی دل آزاری ہوئی ہے۔ ایسی بے شمار نفرت پسند سرگرمیوں فیس بک پر دیکھنے میں آتی ہیں۔جس سے پوری امت مسلماں کے دل خون کے آنسو روتے ہیں۔
ایسی نفرت پسند سرگرمیاں فیس بک پر دیکھنے میں آتی ہیں جن کی جتنی بھی مذمت کی جائے وہ کم ہے۔
بلکہ ناقابل معافی جرم ہے حکومت کو چاہیے کہ وہ فیس بک کے سربراہ سے بات کرکے اسلام مخالف مواد کو فوری طور پر فیس بک اور سوشل میڈیا سے ہٹانے کے فوری طور پر انتظامات کرے۔ جو عالمی سطح پر نفرت شدت پسندی اور پرتشدد واقعات میں اضافے کا باعث بن رہیہیں ۔پوری پاکستانی قوم اور پوری دنیا میں رہنے والے مسلمان اس گستاخانہ عمل کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔حکومت سے مطالبہ ہے کہ وہ فرانس سے سفارتی تعلقات ختم کرکے اس کی تمام اشیا پر فوری طور پر پابندی لگائی جائے تاکہ آئندہ کوئی ملک بھی ایسی گستاخی کرنے کا سوچ بھی نہ سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں