inran, qater 17

قطر اوپیک سے فیصلہ پر نظر ثانی کرے، ایران کا مشورہ

تہران:ایران کے وزیر پٹرولیم بیجن نامدار زنگنہ نے کہا ہے کہ قطر اوپیک سے علیحدگی کے فیصلہ پر نظر ثانی کرے،بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق قطر کو اس وقت پٹرول پیدا کرنے والے متعدد اہم ممالک کی وجہ سے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس لئے قطر کی انتظامیہ نے اوپیک سے علیحدگی کا فیصلہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس لئے قطر کے اوپیک سے علیحدگی کے فیصلے کا جائزہ لینے کی ضرورت ہے۔ایران کے اوپیک کے نمائندے حسین کاظم پور نے کل ایک بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ سعودی عرب اور روس کی قیادت میں اوپیک کے مشترکہ وزرا کے اجلاس میں پٹرول کی پیداوار کے بارے میں یکطرفہ طور پر جو فیصلہ کیا گیا تھا اس کی وجہ سے قطر اوپیک سے علیحدگی پر مجبور ہوا ہے۔ ویانا میں کل ہونے والے اوپیک کے سربراہی اجلاس میں پٹرول کی پیداوار میں کمی کرنے کے فیصلے کی توقع کی جا رہی ہے۔ قطر کے وزیر توانائی سعد شیردہ الکعبی نے سوموار کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اوپر سے علیحدگی کا فیصلہ سنایا تھا۔قطر 1961 سے اب تک اوپیک کارکن چلا آ رہا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں