36

پاکستانی ایئرپورٹس پر دُبئی میں ملازمت کی تلاش میں جانے کے خواہش مندوں کو روک دیا جائے گا

دُبئی: دُبئی میں واقع پاکستانی قونصل خانے نے نے خبردار کیا ہے کہ جو لوگ متحدہ عرب امارات میں ملازمت کی تلاش میں آنا چاہتے ہیں، وہ وزٹ اور ٹورسٹ ویزہ پر دُبئی نہ آئیں، ورنہ انہیں اماراتی حکام کی جانب سے یئرپورٹ سے ہی واپس بھجوا دیا جائے گا۔ گزشتہ چند روز کے دوران بھی ایسے سینکڑوں پاکستانیوں کو واپس بھجو ا دیا گیا ہے جو ملازمت کی خاطر ٹورسٹ یا وزٹ ویزے پر دُبئی پہنچے تھے۔
پاکستانی قونصل خانے کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں موجود متعلقہ اتھارٹیز کو بھی آگاہ کر دیا گیا ہے کہ وہ ایسے پاکستانیوں کو دُبئی کی پرواز میں سوار نہ ہونے دیں جو ملازمت کی خاطر یہاں آنا چاہتے ہیں۔ اب دُبئی جانے والے پاکستانیوں کے لیے پاکستانی ایئر پورٹس پر دو چیک پوائنٹس بنا دیئے گئے ہیں۔
پہلا چیک پوائنٹ ایئرپورٹس پر چیک ان کاؤنٹرز پر ہو گا جبکہ دوسرا چیک پوائنٹ امیگریشن کاؤنٹرز پر ہو گا۔
اگر ان کاؤنٹرز کا عملہ محسوس کرے کہ کوئی پاکستانی ملازمت کی تلاش میں ٹورسٹ ویزے پر دُبئی جانا چاہتا ہے تو اسے پرواز میں سوار ہونے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ جبکہ دُبئی کا امیگریشن عملہ بھی اگر محسوس کرے گا کہ پاکستان یا بھارت ، بنگلہ دیش سے آنے والا مسافر ملازمت کی تلاش میں یہاں آیا ہے تو اسے دُبئی ایئرپورٹ پر ہی روک کر وطن واپس بھیج دیاجائے گا۔ قونصل خانے نے پاکستانی اتھارٹیز کو بھی ہدایت کی ہے کہ جو لوگ ٹورسٹ ویزہ پر دُبئی آرہے ہیں، ان کے پاس ریٹرن ٹکٹ ہونا لازمی ہے، اس کے علاوہ ہوٹل کی بکنگ اور کم از کم 2 ہزار درہم پاس ہونا بھی لازمی ہوں گے۔ کوئی ایک بھی شرط پوری نہ ہونے پر وطن واپس بھجوا دیا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں