ہانگ کانگ وباء پر قابو پانے کیلئے سماجی دوری کے اقدامات کو مزیدسخت کرے گا

ہانگ کانگ(جرات نیوز)ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقہ(ایچ کے ایس اے آر) کی چیف ایگزیکٹو کیری لام نے کہاہے کہ ہانگ کانگ میں نوول کروناوائرس وبا ء کی بدترین ہوتی ہوئی صورتحال کے پیش نظر ریستورانوں کے اندر شام6بجے کے بعد کی خدمات پر پابندی سمیت سماجی دوری کے اقدامات کو مزید سخت کیاجائے گا۔لام نے منگل کے روز ایگزیکٹو کونسل کے اجلاس میں شرکت سے قبل میڈیا کو بتایا کہ حالیہ وبا پریشان کن ہے جس میں گزشتہ ایک ہفتہ کے دوران نوول کروناوائرس کے 661نئے مریض رپورٹ ہوئے ہیں، شدید بیمار اور تشویشناک حالت کے مریضوں میں نہ صرف بوڑھے بلکہ نوجوان افراد بھی شامل ہیں۔لام نے کہا کہ گزشتہ لہر کی نسبت اب صورتحال زیادہ پیچیدہ ہے کیونکہ بیمار افراد پورے ہانگ کانگ میں پھیلے ہوئے ہیں اور متعدد گروہ ملوث ہیں،انہوں نے مزید کہا کہ ایسے کیسز کی تعداد بڑھ رہی ہے جن کا پتہ نہیں لگایا جا سکتا جو کہ اس بات کی علامت ہے کہ معاشرے میں خاموشی سے بہت زیادہ ترسیل ہورہی ہے۔ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقہ کی حکومت وائرس کا پھیلاؤروکنے کی خاطر لوگوں کی عوامی مقامات پر آمد کم کرنے کیلئے اقدامات کو مزیدسخت کرے گی،ریستورانوں کے اندر کھانا کھانے پر شام 6بجے کے بعد پابندی ہوگی اور سرکاری ملازمین کے گھرسے کام کرنے کے انتظامات کو مزیدمضبوط کیاجائے گا۔لام کے مطابق فٹنس کے مراکز، بیوٹی پارلرز، مالش کے مراکز سمیت کاروباری علاقوں کو بند کرنے کی ضرورت ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں