صدارت کے اختتام سے قبل شمالی کوریا سے تمام تنازعے حل کرنا چاہتا ہوں، مون جے ای

سیئول: جنوبی کوریا کے صدر مون جے ای نے اپنے عہدے کے اختتام سے قبل سخت حریف ملک شمالی کوریا کے ساتھ تمام تنازعے حل کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق جنوبی کوریا کے صدر مون جے ای نے شمالی کوریا کے ساتھ پُرامن اور مستحکم تعلقات کے قیام کی خواہش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ صدارت کے خاتمے سے قبل پڑوسی ملک کے ساتھ تمام تنازعوں کو حل کرنا چاہتا ہوں۔
جنوبی کوریا کے صدر مون جے اِن نے نئے سال کے آخری خطاب میں اپنے عہدے کے آخری مہینوں کو شمالی کوریا کے ساتھ سفارتی پیش رفت کے لیے استعمال کرنے کا وعدہ کرتے ہوئے کہا کہ بین الکوریائی تعلقات کو معمول پر لانے کی کوششیں جاری رکھیں گے۔
جنوبی کوریا کے صدر مون جے ای نے مزید کہا کہ میں پائیدار امن کو ادارہ جاتی بنانے کی کوششوں کو نہیں روکوں گا، مجھے امید ہے کہ اگلی انتظامیہ میں بھی بات چیت کی کوششیں جاری رہیں گی۔جنوبی کوریا کے صدر مون جے ای کے امن کے لیے ناقابل واپسی مذاکرات کے عزم پر سخت حریف ملک شمالی کوریا کی جانب سے مکمل خاموشی اختیار کی گئی ہے۔
واضح رہے کہ 2018 اور 2019 میں سخت حریف ممالک شمالی کوریا اور جنوبی کوریا کے صدور کے درمیان تاریخی ملاقاتیں ہوئی تھیں جب کہ سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھی ایک ملاقات میں شریک تھے تاہم یہ ملاقاتیں بے نتیجہ ثابت ہوئی تھیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں