وزیراعظم کے خلاف نااہلی کی درخواست دینے والے پر 10 ہزار روپے کا جرمانہ عائد

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کے خلاف نااہلی کی درخواست دینے والے درخواست گزار پر عدالت نے وقت ضائع کرنے پر 10 ہزار روپے کا جرمانہ عائد کردیا۔ ذرائع کے مطابق گزشتہ روز اسلام آباد ہائی کورٹ نے وزیراعظم عمران خان کو نااہل قرار دینے کی درخواست ناقابل سماعت قرار دے دیتے ہوئے لکی مروت کے رہائشی شہری فدا اللہ کی درخواست سماعت کے بعد خارج کردی تھی۔ اور ریمارکس دیئے کہ اپنے حلقہ کے ایم این اے سے کہیں کہ وہ اس متعلق پٹیشن دائر کریں۔عدالت نے وزیراعظم عمران خان کو بطور رکن اسمبلی نااہل قرار دینے کی درخواست خارج کرنے کا تحریری فیصلہ جاری کردیا ہے، جس میں درخواست گزار فداللہ پر 10 ہزار روپے کا جرمانہ عائد کردیا گیا ہے، اور درخواست گزار کو تین دنوں میں جرمانہ کی رقم جمع کرانے کا حکم دیا گیا ہے۔عدالت نے تحریری فیصلے میں کہا ہے کہ اس طرح کی درخواستیں عوامی مفاد کے زمرے میں نہیں آتیں، شہری فدا اللہ نے عدالتی اور سائلین کا وقت ضائع کیا۔ عدالت نے درخواست گزار سے جرمانے کی رقم لے کر سرکاری خرچ پر وکیل فراہم کرنے کے فنڈ میں رقم جمع کرانے کی ہدایت کردی۔
واضح رہے کہ لکی مروت کے رہائشی شہری فدا اللہ نے وزیراعظم کی نااہلی کی درخواست میں کہا تھا کہ سینیٹ الیکشن کے بعد عمران خان نے ایک بیان میں کہا تھا ان کے 15 ایم این اے بکے ہیں، شیخ رشید نے بھی عمران خان کے بیان کی تصدیق کی تھی، میں نے اپنی درخواست میں عمران خان نیازی کی نااہلی کی استدعا کی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں