لاہور میں درجنوں وارداتوں میں ملوث 3 خطرناک ٹارگٹ کلر گرفتار

لاہور: شاد باغ پولیس نے شہر میں ٹارگٹ کلنگ کی درجنوں وارداتوں میں ملوث 3 خطرناک شوٹرز کو گرفتار کرلیا۔
ایس پی سٹی حفیظ الرحمان بگٹی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایس پی سٹی انویسٹی گیشن سرفراز ورک نے بتایا کہ شاد باغ پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے 3 خطرناک شوٹرز ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے، تینوں ملزمان درجنوں وارداتوں میں ملوث تھے۔
سرفراز ورک نے بتایا کہ ملزمان نے گزشتہ رات ایک فیملی کو لوٹنے کی کوشش کی، متاثرہ افراد نے 15 پر کی، جس پر پولیس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے ملزمان کا پیچھا کیا تو ملزمان کی جانب سے پولیس ٹیم پر فائرنگ شروع کر دی گئی، تاہم معجزانہ طور پر پولیس پارٹی محفوظ رہی، اور کافی کوششوں کے بعد ملزمان کو گرفتار کر لیا، گرفتار ملزمان میں شہباز عزیز بٹ، ساجد علی اور ندیم شامل ہیں، جب کہ کارروائی کے دوران ان کے قبضہ سے 2 پسٹل اور موٹر سائیکل برآمد کرلی گئی ہے۔
ایس پی سٹی حفیظ الرحمان نے بتایا کہ ملزمان نے دوران تفتیش درجنوں واداتوں کا انکشاف کرتے ہوئے بتایا کہ وہ افضال عرف کنو کے لئے ٹارگٹ کلنگ کرتے ہیں جو اس وقت بیرون ملک ہے، جب کہ یہاں شہباز بٹ کے کہنے پر ساجد علی اور ندیم دونوں قتل اور بھتہ کے لیے لوگوں کے گھروں، دفاتر اور دوکانوں پر فائرنگ کرتے تھے۔
ایس پی سٹی کے مطابق ندیم نامی ملزم نے افضال کنو اور گرفتار ملزم شہباز بٹ کے کہنے پر سبزہ زار میں مکان کرایہ پر لیا اور ساجد نے گلی میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کیے اور ریکی کر کے فائرنگ سے فیصل نامی شخص کو قتل کیا، گرفتار ملزم شہباز بٹ کا دبئی میں مقیم بنگش پٹھان سے بھی تعلق ہے جو قحبہ خانہ چلاتا ہے اور قحبہ خانہ پر کام کرنے والی پاکستانی لڑکیوں کو حراساں کرتے ہیں، ملزمان بھتہ خوری کی خاطر معصوم لوگوں پر فائرنگ کرتے اور جان سے مار دینے کی دھمکیاں دیتے۔
حفیظ الرحمان بگٹی نے بتایا کہ شہباز بٹ نے لاہور کے مشہور تاجر جونا بٹ جو لیگی رہنما بلال یسین کا کزن ہے کے قتل کا پلان کر رکھا تھا، دوارن تفتیش ملزمان نے مزید انکشاف کیا کہ ملزمان نے ہی فائرنگ کے لیےعابد باکسر کے گھر کی ریکی کی اور ساجد نے کیمرے انسٹال کیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں