ٹھٹھہ: تیز ہواؤں سےکشتیاں اُلٹنے کا واقعہ، 4 ماہی گیروں کی لاشیں مل گئیں، 8 لاپتہ

کیٹی بندر کے قریب گہرے سمندر میں3 کشتیاں الٹنے کے واقعے میں لاپتہ ہونیوالے مزید 3 ماہی گیروں کی لاشیں مل گئی ہیں جبکہ 8 ماہی گیروں کی تلاش کے لیے ‘سرچ اینڈ ریسکیو آپریشن ‘ پاک نیوی کے ہیلی کاپٹروں اور ہیوی بوٹس کے ذریعے کیا جا رہا ہے۔پاکستان فشر فورک فورم کےمطابق ہفتے کے روز تیز طوفانی ہواؤں کے باعث حجامڑو کریک اورکائر کریک کے مقام پر 3کشتیاں اُلٹ گئیں تھیں جسکے نتیجے میں 46 ماہی گیر لاپتہ پوگئے تھے۔پاکستان فشر فورک کے ترجمان کا کہنا ہے کہ اب تک 4 ماہی گیروں کی لاش نکال لی گئی ہیں اور 34 کو بچالیا گیا تھا جبکہ آج 8 ماہی گیروں کی تلاش کے لیے نیوی کی ریسکیو ٹیمیں اور دو ہیلی کاپٹر کا آپریشن جاری ہے۔
پاک نیوی کے جوانوں کے کھلے سمندر میں سرچ اینڈ ریسکیو آپریشن میں 2 ہیلی کاپٹر اور 4 ہیوی بوٹس 2 شپ 200 پاک نیوی کے جوان اور غوطہ خور شامل ہیں۔کشتیاں ڈوبنے کے واقعے کے بعدکمشنر حیدرآباد نے ٹھٹھہ،سجاول اور بدین اضلاع میں سمندر میں شکار اور نہانے پرپابندی عائد کردی ہے۔یہ پابندی ایک ہفتہ کے لیے دفعہ 144 کے تحت نافذ کی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں