ام رباب چانڈیو کیس؛ پی پی پی ایم پی اے سردار برہان چانڈیو کی گرفتاری کا حکم

دادو/میہڑ: عدالت نے تہرے قتل کے کیس میں پیپلزپارٹی کے ایم پی اے برہان چانڈیو اور علی گوہر چانڈیو کی ضمانت کی درخواست مسترد کرتے ہوئے دونوں کی گرفتاری کا حکم دے دیا۔میہڑ میں تہرے قتل کے مقدمے کی سماعت ماڈل کرمنل ٹرائل کورٹ میں ہوئی۔ متاثرہ خاتون ام رباب چانڈیو ، قتل کے مقدمے میں نامزد ایم پی اے سردار چانڈیو اور دیگر ملزمان عدالت میں پیش ہوئے تاہم ملزم ایم پی اے برھان چانڈیو پیش نہیں ہوئے۔
ماڈل کرمنل ٹرائل کورٹ کے جج قاضی ندیم بدر نے ام رباب کے والد، دادا اور چچا کے قتل کے مقدمے میں مرکزی ملزمان ایم پی اے برھان چانڈیو اور علی گوہر چانڈیو کی عبوری ضمانت رد کردی جبکہ ایم پی اے سردار چانڈیو کی ضمانت قبول کرلی۔ام رباب چانڈیو نے کہا کہ یہ عدالت اور انصاف کی جیت ہوئی اور ہم سب کی جیت ہے ، ایم پی اے برھان چانڈیو کی ضمانت رد ہوئی ہے وہ بھاگ گیا ہے، آئی جی سندھ کو اپیل کروں گی کہ پولیس کو بھیجیں اور برھان چانڈیو کو گرفتار کرائیں، عدالت نے حکم کردیا ہے کہ ان کو گرفتار کریں ، ہم پرامید ہیں کہ ان کو ہتھکڑیاں پہنائی جائیں گی۔
کیس کی سماعت کے موقع پر عدالت کے باہر اور اطراف کے راستوں پر پولیس اور رینجرز کے اہلکاروں کی بھاری نفری تعینات تھی اور سخت چیکنگ کی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں