روس نے فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ پر پابندی عائد کردی

روس نے مقبول سوشل میڈیا سائٹس فیس بک اور اس کی ذیلی ایپلی کیشنز واٹس ایپ اور انسٹاگرام پر پابندی عائد کردی۔
غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق روس نے فیس بک کی جانب سے مسلسل خلاف ورزیوں کے سبب کمپنی کی سروسز کو جمعہ شام 4 بجے سے بند کیا جس کے بعد لاکھوں افراد کی ایپس تک رسائی بند ہوگئی۔
روسی حکام کا کہنا ہے کہ کمپنی نے 2020 اکتوبر سے رواں برس تک 26 بار خلاف ورزیاں کیں جس وجہ سے اس کی سروسز پر روس نے خود پابندی لگادی۔اس حوالے سے کہا جارہا ہے کہ روسی حکام نے میٹا کے علاوہ ٹوئٹر پر بھی جزوی پابندی عائد کی ہے۔
اس کے علاوہ فیس بک کے سینئر عہدیدار نے بھی روس کی طرف سے کمپنی پر لگائی جانے والی پابندی کی تصدیق کی ہے۔یہاں یہ بات بھی قابلِ ذکر ہے کہ یوکرین پر حملوں کے بعد فیس بک نے گزشتہ ہفتے میٹا پر پابندی عائد کرتے ہوئے روسی اشتہارات پر پابندی عائد کردی تھی۔
ناصرف میٹا بلکہ یوٹیوب اور گوگل نے بھی روسی اداروں پر پابندیاں لگائی تھیں، اس کے علاوہ امریکی ٹیکنالوجی کمپنی ایپل نے بھی روس میں اپنی مصنوعات کی فروخت کو بند کردیا تھا اور سروسز بھی محدود کردی تھیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں