پارلیمنٹ حملہ کیس میں عارف علوی کو حاصل صدارتی استثنی ختم

اسلام آباد: انسداد دہشتگردی عدالت نے پی ٹی وی اور پارلیمنٹ حملہ کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا جو 15 مارچ کو سنایا جائے گا۔انسداد دہشتگردی عدالت میں پارلیمنٹ حملہ کیس کی سماعت ہوئی۔ استثنی واپس لینے کے باوجود صدر عارف علوی بطور ملزم پیش نہ ہوئے۔ شاہ محمود قریشی، علیم خان، جہانگیر ترین نے بھی حاضری سے استثنیٰ کی درخواستیں دائر کیں۔پراسیکیوٹر عامر سلطان نے کہا کہ پارلیمنٹ حملہ کیس سیاسی مقدمہ تھا، بریت کی درخواستوں کی حمایت کرتے ہیں۔ فاضل جج نے کہا کہ پھر تو بحث کی ضرورت نہیں۔عدالت نے ملزمان کی بریت کی درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کرلیا، جو 15 مارچ کو سنایا جائے گا۔ عدالت نے صدر عارف علوی کی استثنی ختم کرنے کی درخواست منظور کرلی۔مسلم لیگ ن کی حکومت میں تحریک انصاف کے 2014 کے دھرنے کے دوران پارلیمنٹ ہاؤس اور پی ٹی وی پر حملے کا مقدمہ درج کیا گیا تھا، جس میں عمران خان، موجودہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر تعلیم شفقت محمود اور وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کو نامزد کیا گیا تھا۔اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی عدالت وزیراعظم عمران خان کو پہلے ہی اس مقدمے میں بری کرچکی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں