جزلان قتل کیس میں پیشرفت: اہم ملزم نے خود کو پولیس کے حوالے کردیا

کراچی میں چند روز قبل معمولی جھگڑے کی بنیاد پر قتل کیے جانے والے نوجوان کے کیس میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔کراچی میں 24 اور 25 مئی کی درمیانی شب 19 سالہ طالب علم جزلان کو قتل کرنے میں ملوث اہم ملزم انشال نے خودکوپولیس کے حوالے کردیا ہے۔ملزم کے والد نے خود اپنے بیٹے کو پولیس کے حوالے کیا تاہم کیس کے مرکزی ملزم عرفان اور احسان کوپولیس تاحال گرفتارنہیں کرسکی ہے۔مرکزی ملزم عرفان کے والد فیض محمد خان اوربھائی حسنین کو پولیس نے پہلے ہی گرفتار کرلیا تھا۔پولیس 5 جون کو جزلان قتل کیس میں پیش رفت کی رپورٹ ملیرکورٹ میں جمع کرائے گی اور اس کی سماعت بھی ملیرکورٹ میں ہوگی۔
واضح رہے کہ دوستوں کے ساتھ پڑھائی کے لیے گھرسے نکلنے والے 21 سالہ طالب علم کو معمولی جھگڑے پر گولی مار کر قتل کردیا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں