لانگ مارچ کے دوران مخصوص خواتین کے کردار کی تعریف پر پی ٹی آئی کی دیگر خواتین ارکان سیخ پا

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے لانگ مارچ کے دوران پولیس تشدد اور شیلنگ برداشت کرنے کے باوجود مخصوص ارکان کی تعریف پر پی ٹی آئی کی دیگر خواتین ارکان سیخ پا ہو گئیں۔چیئرمین تحریک انصاف عمران خان سے خواتین ارکان قومی اسمبلی کی ملاقات ہوئی جس میں وائس چیئرمین پی ٹی آئی شاہ محمود قریشی اور عامر ڈوگر بھی موجود تھے۔ذرائع کے مطابق ملاقات میں عمران خان کو لانگ مارچ کے دوران خواتین کے کردار کی رپورٹ پیش کی گئی، شاہ محمود قریشی نے رپورٹ میں رکن قومی اسمبلی ملیکہ بخاری اور زرتاج گل کی تعریف کی اور بتایا کہ ملیکہ بخاری اور زرتاج گل نے پولیس تشدد اور شیلنگ کا سامنا کیا۔ذرائع کا بتانا ہے شاہ محمود قریشی کی جانب سے پیش کردہ رپورٹ پر ملاقات میں موجود دیگر پی ٹی آئی خواتین ارکان سیخ پا ہو گئیں۔ذرائع کے مطابق خواتین ارکان کا کہنا تھا کہ ڈی چوک پر بدترین شیلنگ کو ہم نے برداشت کیا اور رپورٹ میں ہمارا ذکر ہی نہیں، ہم خواتین کارکنان کو لائے، شیلنگ سے ٹس سے مس نہ ہوئے لیکن رپورٹ میں ہمارا کوئی نام ہی نہیں ہے۔ذرائع کے مطابق خواتین ارکان نے عمران خان سے مطالبہ کیا کہ چیئرمین صاحب، جو آپ کو رپورٹ پیش کی گئی وہ ہمیں بھی دکھائی جائے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے خواتین ارکان کی جدوجہد کو سراہا اور خواتین ارکان قومی اسمبلی پر تشدد و شیلنگ کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔
خواتین ارکان کا کہنا تھا پتہ نہیں کیوں میرٹ پر رپورٹ پیش نہیں کی گئی، رپورٹ میں مخصوص ارکان کی تعریف کی گئی، سڑکوں پر ہم نے مقابلہ کیا اور سارا کریڈٹ کنٹینر پر موجود افراد کو دیا جا رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں