برطانیہ سے ریکور کیے گئے 50 ارب سرکاری خزانے میں جمع نہیں کروائے گئے، وفاقی وزیرداخلہ

وفاقی وزیر داخلہ راناثناء اللہ نے عمران خان حکومت پر الزام لگایا کہ برطانیہ میں پاکستان کے ریکور کیے گئے 50 ارب سرکاری خزانے میں جمع نہیں کرائے گئے۔اسلام آباد میں وزیر داخلہ راناثناء اللہ کی کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت نے اپنا حصہ طے کرکے بحریہ ٹاؤن کو ریلیف دیا، معاملے پر تحقیقات کیلئے کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔رانا ثناء اللہ نے کہا کہ بحریہ ٹاؤن نے ایک ٹرسٹ کو 458 کنال زمین عطیہ کی، جس کے ٹرسٹی عمران خان اور ان کی اہلیہ ہیں۔ بحریہ ٹاؤن سے معاہدے پر عمران خان کی اہلیہ کے دستخط موجود ہیں جبکہ بنی گالہ میں 240کنال زمین فرح گوگی کے نام پر منتقل کی گئی۔
اس موقع پر مسلم لیگ ن کے رہنماء مصدق ملک نے کہا کہ لندن میں بحریہ ٹاؤن کے غیر قانونی پیسے اکانومک کرائم ایکٹ کے تحت پکڑے گئے اور برطانوی قانون کے تحت غیر قانونی منتقل ہونے والا پیسہ ملک کو واپس ادا کیا جاتا ہے۔مصدق ملک نے کہا کہ سابق حکومت نے عوام کے پیسے کے معاہدے کو صیغہ راز میں رکھا، برطانیہ سے ملنے والا پیسہ بحریہ ٹاؤن کو جعل سازی سے واپس کیا گیا جبکہ کابینہ کو دھوکے میں رکھ کر بحریہ ٹاؤن کو فائدہ پہنچایا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں