پاکستان فروری تک ’’گرے لسٹ‘‘ میں رہے گا، سرکاری ذرائع

اسلام آباد: فیٹف کے رواں اجلاس میں “گرے لسٹ” سے پاکستان کے نکلنے کا امکان نہیں تاہم باہر نکلنے کیلیے ایک قدم اور قریب جا سکتا ہے۔سرکاری ذرائع نے بتایا منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کیلیے بین الاقوامی واچ ڈاگ سے رعایت لینے کیلیے بھرپور لابنگ کے باوجود پاکستان کم از کم فروری تک ‘گرے لسٹ’ میں رہے گا۔منگل کے روز برلن میں شروع ہونے والا ایف اے ٹی ایف اجلاس پاکستان کی پیشرفت کا جائزہ لے گا اور فیصلہ کرے گا کہ اسے گرے لسٹ میں رکھا جائے یا نہیں؟ اس فیصلے کا اعلان 17 جون کو اجلاس کے اختتام پر کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں