کبھی سوچا نہ تھا کہ فیٹف پر مبارکباد اے ٹی سی کے باہر وصول کروں گا، حماد اظہر

لاہور: سابق وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر کا کہنا ہے کہ کبھی سوچا نہیں تھا کہ فیٹف کی مبارکباد انسداد دہشت کی عدالت کے سامنے لوں گا.تفصیلات کے مطابق لانگ مارچ کے دوران پی ٹی آئی رہنماؤں پر مقدمات سے متعلق کیسز کی سماعت ہوئی، اے ٹی سی نے تحریک انصاف کے 13 رہنماؤں کی 28 جون تک عبوری ضمانت منظور کرلی۔
عبوری ضمانت پانے والوں میں حماد اظہر ،یاسمین راشد ،اسلم اقبال ،میاں محمود الرشید، جمشید چیمہ ،مسرت چیمہ ،مراد راس ،عندلیب عباس سمیت دیگر شامل ہیں۔انسداد دہشتگری عدالت نے آئندہ سماعت پر پولیس سے مقدمے کا ریکارڈ طلب کرلیا جبکہ اے ٹی سی نے تمام ملزمان کو شامل تفتیش ہونے کا حکم بھی دیا۔
اس سے قبل وکیل پی ٹی آئی نے عدالت کو بتایا کیا کہ پولیس نےپی ٹی آئی رہنماؤں کو بھاٹی گیٹ کے مقدمے میں نامزد کیا ہے اور مقدمے میں دہشتگردی کی دفعات شامل کردی ہیں۔
سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر کا کہنا تھا کہ کبھی سوچا نہیں تھا کہ ایف اے ٹی ایف کی مبارکباد اےٹی سی کےباہروصول کروں گا، اور نہ ہی کبھی یہ سوچا تھا کہ اس طرح کےچہرے ہم پر مسلط ہونگے، یاد رکھیں کہ ہم اپنے مقصد سے پیچھے ہٹنے والے نہیں نہ ہم ڈرنے والےہیں۔
واضح رہے کہ سابق وزیر توانائی حماد اظہر جو انسدادِ منی لانڈرنگ اور انسدادِ دہشت گردی کی مالی معاونت سے متلعق اقدامات کے لیے پی ٹی آئی حکومت کے اعلیٰ کوآرڈینیٹر بھی تھے، انہوں نے پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے کے حوالے سے غیر معمولی کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا۔
پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما حماد اظہر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ایف اے ٹی ایف سے متعلق مشکل مرحلہ مکمل ہو گیا ہے اور ہم نے 34 میں سے 32 نکات مکمل کیے تھے اور حکومت جانے سے دو ماہ پہلے بقیہ دو نکات کی بھی رپورٹ جمع کروا دی تھی۔ تمام اداروں کی نمائندگی فیٹف کوآرڈینیشن کمیٹی میں تھی۔
انہوں نے کہا کہ اسٹیٹ بینک کے فنانشل یونٹ کو اپ گریڈ کیا گیا اور بارڈرز پر کرنسی اسمگلنگ کے خلاف کارروائیاں کی گئیں۔ امکان تھا ہمیں بلیک لسٹ میں ڈال دیا جائے گا لیکن فیٹف کوآرڈینیشن کمیٹی نے دن رات کام کیا۔ ہمیں ہائی رسک اٹنری میں رکھا گیا تھا۔سابق وفاقی وزیر نے کہا کہ خوشی کی بات ہے ہم 34 نکات پر پورے اترے ہیں اور دعوے سے کہتا ہوں فیٹف پر دنیا میں سب سے بہترین کام پاکستان میں ہوا۔ پی ٹی آئی حکومت نے درجنوں قوانین منظور کروائے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہمارے کرنسی کے اعتراضات پر کریک ڈاؤن کیا گیا۔ پاکستان کے لیے آج خوشی کا دن ہے۔ بہت سارے بے نامی اکاؤنٹس پکڑے گئے اور قانونی سسٹم میں جو جدت آئی ہے اس کا پیغام پوری دنیا میں گیا۔
پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ بھارت نے فیٹف پر سیاست کی اور منفی کردار ادا کیا۔ اب ہم نے ایف اے ٹی ایف سے متعلق اقدامات کو جاری رکھنا ہے جبکہ منی لانڈرنگ کے خلاف سختی سے ترسیلات زر میں اضافہ ہوا اور ہم نے فیٹف کی مشکل شرائط پر بہترین انداز میں کام کیا۔انہوں نے کہا کہ دنیا جان چکی ہمارا معاشی نظام اب عالمی معیار سے مطابقت رکھتا ہے اور گرے لسٹ سے نکلنے سے سرمایہ کاری کو فروغ ملے گا۔ جو ملک بلیک لسٹ میں ہوتے ہیں ان سے بینک کی ڈیلنگ مشکل ہوتی ہے اور اب ہمیں فیٹف کی ممبر شپ کی طرف جانا چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں