سیٹھ عابد کی بیٹی کے قتل کیس کی تحقیقات میں اہم پیشرفت

لاہور: مسلم ٹاؤن میں سیٹھ عابد کی بیٹی کے قتل کیس کی تحقیقات میں مزید پیش رفت سامنے آئی ہے۔
پولیس کےمطابق تفتیش میں ملزم فہد کے ساتھ گرفتار دیگرملازمین کےکرداربھی سامنےآگئے ہیں جس میں ملزم کے ساتھ گھریلو ملازمہ عطیہ نے قتل کے بعد بیڈ کی خون آلود چادریں تبدیل کیں۔پولیس کا کہنا ہےکہ ملازمین عابد اور شاہد نے قتل میں استعمال ہونے والا اسلحہ چھپایا اور ملازم روح الامین ملزم فہد کے ساتھ مقتولہ کواسپتال لے کرگیا، ان تمام ملازمین نے شواہد کو مٹایا جس پر انہیں گرفتارکرلیاگیا۔پولیس کے مطابق ملازمہ عطیہ نے بیان میں بتایا کہ ملزم فہدکوٹ لکھپت کے رہائشی ایک درزی کی بیٹی سے شادی کرنا چاہتا ہے، دونوں کی دوستی فیس بک پرہوئی لیکن مالکن شادی سے منع کرتی تھی۔پولیس کا بتانا ہےکہ ملزم نے والدہ کو قتل کرنے کے بعد خودکشی کا رنگ دینےکی کوشش کی تھی جب کہ پولیس حراست میں لے پالک فہداپنی والدہ کو قتل کرنے کا اعتراف کرچکا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں