25 مئی کے واقعات پر عطا تارڑ اور رانا ثناء اللہ سمیت ملوث افراد کیخلاف تفتیش کا آغاز کر دیا گیا ہے ، فواد چودھری

لاہور : پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر فواد چودھری نے کہا کہ 25 مئی کے واقعات پر عطا تارڑ اور رانا ثناء اللہ سمیت ملوث افراد کیخلاف تفتیش کا آغاز کر دیا گیا ہے ، انہیں شامل تفتیش ہونا چاہئے ۔لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چودھری نے کہا کہ کل ہمارا پارٹی اجلاس ہوا جس میں پنجاب حکومت سے مطالبہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے کہ 15 روز میں سانحہ 25 مئی کے ذمہ داران کے خلاف تحقیات کی جائیں ، ہمیں بتایا گیا ہے کہ عطا تارڑ ، رانا ثناء اللہ سمیت دیگر ملوث افراد کے خلاف تفتیش کا آغاز کر دیا گیا ہے ، جو ایس ایچ اوز اس میں ملوث تھے انہیں عہدوں سے ہٹا دیا گیا ہے جبکہ کچھ لوگوں کی گرفتاریاں بھی کی جا رہی ہیں ۔
فواد چودھری نے کہا کہ ایک جانب تو حمزہ شہباز ملک سے فرار ہو گئے ہیں ، آج عدالت میں وزیر اعظم پیش ہوئے نہ حمزہ شہباز ، دوسری جانب ایک غریب آدمی کے گھر پر چھاپہ مارا جاتاہے اور اس کی 10 ماہ کی بچی کو پولیس حراست میں لے لیتی ہے ، ماں کو بھی حراست میں لیا جاتا ہے اور اگلے دن تک بچی کو ماں سے ملنے نہیں دیا جاتا، یہ دوہرا معیار ہے ، ایک طرف ملک کو لوٹنے والا 50 روپے کے اسٹامپ پیپر پر بھاگ جاتا ہے اور اس کا گارنٹر آزاد پھر رہا ہے ، آج لاہور کے جلسے میں حقیقی آزادی کے خواب کو پورا کرینگے جس کا آخری مرحلہ شروع ہو گی اہے ۔
فواد چودھری نے کہا کہ آج کا جلسہ پورے پاکستان کی امیدوں کا مرکز ہے ، عمران خان آئندہ کا لائحہ عمل دینے جا رہے ہیں ، انتخابات حقیقی آزادی کامنظر بیان کرینگے ، پاکستان کے عوام اللہ کے بنائے قوانین کے اندر رہتے ہوئے جو فیصلہ کرینگے وہ حتمی ہو گا ۔ جس طرح ہمارے خلاف فاشسٹ کارروائیاں ہوئیں اس طرح کی کوئی کارروائی پنجاب میں نہیں ہوئی ، عطا تارڑ اور رانا ثناء اللہ کو تفتیش میں شامل کیا جا رہا ہے اور یہ پولیس کا حق ہے ، یہ ملوث افراد اسلام آباد میں چھپ کر بیٹھے ہیں ، انہیں بالکل خوفزدہ نہیں ہونا چاہئے اور اپنے کردار کی وضاحت کرنی چاہئے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں