cheating in chinese universties 61

عقل کی بجائے نقل کرنے والے طلبا کی چھٹی

بیجنگ :چین کی معروف سنگہوایونیورسٹی نے گریجوایشن کلاسوں کے طلباءکو نقل کرنےاورتعلیمی ضابطوں کی خلاف ورزی پریونیورسٹی کے نکالنے کا اعلان کر دیاہے جبکہ پیکنگ یونیورسٹی اور رینمن یونیورسٹی نے بھی نقل کرنے والے طلباءکیلئے ضابطے سخت کردیئے ہیں۔چائنہ ڈیلی کی رپورٹ کے مطابق وہ طلباء جنہوں نےنقل کی یا دوسروں کی تحریریں اپنےنام سےپیش کیں توانہیں یونیورسٹی سےفارغ کر دیا جائےگا۔یونیورسٹی کے نظم وضبط کےبارے میں نئے قواعد کے مطابق نقل کرنےوالے طلباءمیرٹ پر نہیں ہوں گے،ایسے طلباءسکالر شپ کے اہل بھی نہیں ہوں گےاورنہ ہی انہیں پوسٹ گریجوایٹ اسٹڈیز کے امتحانات میں داخلہ مل سکے گا،اخبار ایک سینئر ریسرچر چوزاﺅہوئی کے حوالے سے لکھتا ہے کہ تعلیمی معیار کوہرصورت میں چینی یونیورسٹیوں کے طلباءکو ترجیح دینی چاہیے، خواہ اس کی اہمیت پر زیادہ زور نہ بھی دیا جائے، اساتذہ کو چاہیے کہ وہ طلباء کو تعلیم کے حصول میں رہنمائی فراہم کریں اور یونیورسٹیاں ایسے طلباءکو سخت سزادیں جواپنے مکالہ جات اورمضامین میں نقل کرتے ہیں،پیکنگ یونیورسٹی اور رینمن یونیورسٹی نےبھی نقل کرنےوالےطلباءکیلئے ضابطے سخت کردیئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں