CM punjab meet Maqsood Ahmed 28

وزیراعلیٰ سے چیئرمین پنجاب پبلک سروس کمیشن کی ملاقات،سال 2018 کی رپورٹ پیش کی

لاہور:وزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدارسےچیئرمین پنجاب پبلک سروس کمیشن لیفٹیننٹ جنرل(ر) مقصود احمدنے ملاقات کی۔چیئرمین پنجاب پبلک سروس کمیشن نے وزیراعلیٰ کو سال 2018 کی رپورٹ پیش کی۔چیئرمین پنجاب پبلک سروس کمیشن نےادارے کی کارکردگی کےبارے میں وزیراعلیٰ کوآگاہ کیا۔سردارعثمان بزدارنےکہا کہ عوامی خدمت کےجذبے سے سرشار باصلاحیت ٹیلنٹ سامنے لانا حکومت کا مشن ہے۔پنجاب پبلک سروس کمیشن کو اس ضمن میں اپنا بھرپوراور موثر کردار ادا کرنا ہے۔نئے پاکستان میں میرٹ کو آگے لے کر جائیں گے۔میرٹ اورشفافیت سے ہی قومیں آگےبڑھتی ہیں۔ترقی وخوشحالی کی منزل حاصل کرنے کا واحد ذریعہ میرٹ ہے۔ وزیر اعلیٰ کا کہا تھا کہ ہماری حکومت نے صوبے میں میرٹ اور شفافیت کے نئے کلچر کی بنیاد ڈالی ہے۔ اداروں میں بھرتیاں میرٹ کی بنیاد پرکی جارہی ہیں۔پبلک سروس کمیشن کومزید فعال بنانےکیلئے ہرممکن تعاون کریں گے۔ شملہ پہاڑی پر واقع عمارت کی جگہ نئی بلڈنگ کی تعمیرکا جائزہ لیا جائے گا۔ پیپرز مارکنگ کی فیس بڑھانے کے حوالے سے مطالبے پر ہمدردانہ غور کریں گے۔ کمیشن کے دیگر مطالبات کا بھی جائزہ لیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ کو بریفنگ دیتےہوئےچیئرمین پنجاب پبلک سروس کمیشن نے بتایا کہ میرٹ کو فروغ دینے میں پنجاب پبلک سروس کمیشن کا کردار اہمیت کا حامل ہے۔آن لائن انٹرویو سے امیدواروں کو بہت سہولت مل رہی ہے۔ادارے میں جدید ٹیکنالوجی کو فروغ دے کر اسے مکمل طور پر عصر حاضر کے تقاضوں سے ہم آہنگ کیا گیا ہے۔ممبر پنجاب پبلک سروس کمیشن سید ابن عباس بھی اس موقع پر موجود تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں