41

دوبارہ پاکستان میں کھیلنے کیلیے بیتاب ہوں،شین واٹسن

کراچی(جرات نیوز) شین واٹسن پاکستان میں پی ایس ایل میچز کھیلنے کیلیے بیتاب ہیں۔پاکستان کرکٹ کی ویب سائٹ کےپروگرام میں شین واٹسن نے کہا ہے کہ پانچویں ایڈیشن کے تمام میچز پاکستان میں کھیلنے کیلیے تیار ہوں،گزشتہ ایونٹ کے فائنل میں کراچی میں شاندار ماحول دیکھا، خود بھی دورے کا خوب لطف اٹھایا اور زندگی میں ایک یادگار وقت گزارا، سیکیورٹی انتظامات بھی بہترین تھے، دوبارہ پاکستان میں کھیلنے کیلیے بیتاب ہوں، جانتا ہوں کہ وہاں میرے پرستاروں کی بڑی تعداد موجود ہے، ان کے سامنے ایکشن میں نظر آنے کیلیے بیتاب ہوں۔ایک سوال پر آسٹریلوی آل راؤنڈر نے کہا کہ پی ایس ایل ایک مشکل ٹورنامنٹ ہے،کرکٹ خاص طور بولنگ کا معیار بہت شاندار ہے، گزشتہ ایونٹ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو باصلاحیت نوجوان کرکٹرز اور پاور ہٹرز کی خدمات حاصل تھیں،امید ہے کہ اس بار بھی ٹائٹل کے دفاع میں کامیاب ہوجائیں گے۔شین واٹسن نے کہا کہ ٹی ٹین لیگ میں شرکت کا تجربہ اچھا رہا ہے، ایونٹ میں ورلڈکلاس کرکٹرز شریک ہیں،مختصر ترین فارمیٹ جسم پر بھی زیادہ بوجھ نہیں ڈالتا،شائقین بھی لطف اندوز ہوتے ہیں، ہماری ٹیم دکن گلیڈی ایٹرز بہترین کھلاڑیوں پر مشتمل ہے اور اچھا پرفارم کرے گی ۔
شین واٹسن کو سرفراز احمد کے پاکستان ٹیم میں کم بیک کی پوری امید ہے، آسٹریلوی آل راؤنڈر کا کہنا ہے کہ انہوں نے بہترین انداز میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی قیادت کی، ٹیم نے گزشتہ ٹائٹل سے قبل فائنل بھی کھیلے،وہ اچھے کپتان ہی نہیں بلکہ بہترین وکٹ کیپر اور بیٹسمین بھی ہیں،پوری امید ہے کہ ورلڈکلاس کرکٹر کی پاکستان ٹیم میں واپسی ہوگی۔شین واٹسن کا کہنا ہے کہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ میں پاکستان ٹیم کو پیس اور باؤنس کا چیلنج درپیش ہوگا،گرین شرٹس کی مختصر فارمیٹ میںکارکردگی اچھی ہے لیکن آسٹریلوی کنڈیشنز مختلف ہوں گی،خاص طور پر بیٹسمینوں کو پیس اور باؤنس والی پچز سے مطابقت پیدا کرنا ہوگی،پاکستان ٹیم ردھم میں آجائے تو کسی بھی حریف کیلیے مشکلات پیدا کرسکتی ہے۔شین واٹسن بھی بابر اعظم کی صلاحیتوں کے گرویدہ ہوگئے، آسٹریلوی آل راؤنڈر کا کہنا ہے کہ نوجوان بیٹسمین کی خوبی یہ ہے کہ وہ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں بھی بغیر کوئی خطرہ مول لئے تیزی سے رنز بنانے میں کامیاب ہوجاتے ہیں، شاندار بیٹسمین کی صلاحیتوں پر کسی کو شک نہیں ہونا چاہیے۔شین واٹسن نے وہاب ریاض کو اپنا فیورٹ پاکستانی کرکٹر قرار دیدیا، آسٹریلوی آل راؤنڈر کا کہنا ہے کہ ورلڈکپ 2015 کا اسپیل آج بھی یاد ہے،میگا ایونٹ میں بڑا مشہور ٹاکرا ہوا تھا،وہاب ریاض کے پاس رفتار کا بڑا ہتھیار ہے، میں ایک بہترین انٹرنیشنل بولر کو اپنا فیورٹ پاکستانی کرکٹر سمجھتا ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں