75

لاکھوں عازمین آج حج کا رکن اعظم وقوف عرفہ ادا کریں گے

مکہ المکرمہ: فریضہ حج کی ادائیگی کے لیے دنیا بھر سے حجاز مقدس پہنچنے والے لاکھوں کلمہ گو آج 9 ذوالحج کو حج کا رکن اعظم وقوف عرفہ ادا کریں گے۔

دنیا بھر سے آئے ہوئے تمام عازمین منیٰ پہنچ گئے اور رات قیام کیا۔ آج 9 ذوالحج کو حجاج نماز فجر کے بعد حج کے رکن اعظم وقوف عرفہ کی ادائیگی کے لیے میدان عرفات پہنچیں گے جہاں مسجد نمرہ میں خطبہ حج سننے کے بعد نماز ظہر اور نماز عصر ایک ساتھ ادا کریں گے۔ عصر اور مغرب کے درمیان وقوف ہو گا۔

آج بعد نماز فجر غلاف کعبہ تبدیل کردیا گیا۔ یہ قبولیت کی وہ ساعتیں ہیں جن میں کی گئی کوئی دعا اللہ رب العزت رد نہیں کرتا اسلیے عصر اور مغرب کے درمیان حجاج کرام اللہ رب العزت کے حضور گڑگڑا کر خصوصی دعائیں کرتے ہیں۔

سورج غروب ہوتے ہی میدان عرفات کو فوری طور پر چھوڑنے کا حکم ہے اس لیے حجاج کرام میدان عرفات کی حدود سے فوری طور پر مزدلفہ کا رخ کرتے ہیں۔ مزدلفہ میں شیطان کو مارنے کیلیے کنکریاں چننے کیساتھ رات کھلے آسمان تلے قیام کرینگے اور مزدلفہ میں ہی نماز مغرب اور نماز عشاء ایک ساتھ ادا کریں گے۔

رات کھلے آسمان تلے قیام کے بعد نماز فجر کی ادائیگی کے بعد منیٰ پہنچیں گے۔ جہاں شیطان کو کنکریاں مارنے اور قربانی کے بعد بال منڈوا کر احرام کھول دیں گے۔ اسی طرح 11 ذوالحج کو بھی تینوں شیطانوں کو کنکریاں مارنے کا حکم ہے۔ 12 ذوالحج کو آخری دن شیطان کو کنکریاں مارنے کے بعد حجاج کرام مکۃ المکرمہ واپس جا سکتے ہیں۔

واضح رہے کہ 10 ،11، 12 ذوالحج کو منیٰ میں قیام کرنا حج کا لازمی رکن ہے۔ اس دوران طواف زیارت کے لئے حجاج کرام کے لیے مکۃ المکرمہ میں مسجد الحرام جانا لازم ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں