leaser light cloth 21

لیزر لائٹ والے لباس میں رقص تنازع کی شکل اختیار کرگیا

ریاض: عید الفطر کے موقع پر مکہ مکرمہ کی بلدیہ کے زیر انتظام مخصوص رقص کی ویڈیو نے سوشل میڈیا پر گرما گرم بحث کا آغاز کر دیا۔وائر ل ہونے والی ویڈیو میں چند افراد کو موسیقی پر مغربی انداز میں رقص کرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔ رقص کرنے والوں نے جو لباس پہنا ہوا ہے اس پر مخصوص لیزر لائٹس لگائی گئی ہیں جو موسیقی کے ردھم کے ساتھ تیز اور ہلکی ہوتی ہیں۔
بلدیہ کے دفتر میں اور اعلی عہدیداروں کی موجودگی میں رقص کی محفل پر لوگوں کا کہنا ہے کہ مکہ مکرمہ میں اس قسم کے رقص کی اجازت نہیں ملنی چاہیے۔ میونسپل کونسل کے صدر فہد الروقی نے اپنے ٹو ئٹر اکاﺅنٹ پر کہا ہے کہ ’بہت معذرت کے ساتھ شہر مقدس کی بلدیہ کو یہ زیب نہیں دیتا کہ اس قسم کا رقص مکہ مکرمہ میں منعقد کروایا جائے بلکہ اس میں اعلی عہدیداروں کی شرکت اور بھی کسی طرح مناسب بات نہیں۔ رقص کی یہ محفل اہل مکہ مکرمہ کی عکاسی کرتی ہے اور نہ ہی انہیں زیب دیتی ہے کہ اس قسم کی محفل منعقد کی جائے۔‘بلدیاتی کونسل کے صدر الروقی نے سبق نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ’کونسل اس معاملے کو اعلیٰ سطح پر اٹھائے گی اور تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دینے کی سفارش بھی کریں گے۔‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں