PM imran khan 72

وزیراعظم عمران خان کی تنخواہ وفاقی وزراءسے بھی کم

اسلام آباد:سرکاری وسائل استعمال نہ کرنےوالےمنفرد وزیراعظم عمران خان کی تنخواہ اوراخراجات وفاقی وزراءسے بھی کم ہیں، انہوں نے وزیر اعظم ہاﺅس کے ملازمین اور دیگر اخراجات بھی محدود کر دیئے ہیں۔وزیراعظم عمران خان وزرائے اعلیٰ اوروزراء سے بھی کم تنخواہ لے رہے ہیں، وزیراعظم کی سیلری سلپ کے مطابق ان کی بنیادی تنخواہ 107280 روپے ہے۔سیلری سلپ کے مطابق وزیراعظم عمران خان کو مہمانداری الاﺅنس 50 ہزارروپے،ایڈہاک ریلیف الاﺅنس 21456 روپے،ایڈ ہاک الاﺅنس12110 روپے،جبکہ ایک اورایڈہاک ریلیف الاﺅنس 10728 روپےملتا ہے۔وزیراعظم کی تنخواہ پر4595 روپے ٹیکس کٹوتی کی جاتی ہے جس کے بعد انہیں ایک لاکھ 96ہزار 979روپے تنخواہ ملتی ہے۔وزیراعظم عمران خان کے مقابلے میں وفاقی وزراءکی تنخواہ ڈھائی لاکھ روپے کے قریب ہے جبکہ پنجاب کے وزیراعلیٰ کی تنخواہ 3لاکھ 50ہزار روپے ہے۔وزیراعظم کے مقابلے میں پنجاب کے ایک رکن اسمبلی کی تنخواہ تقریباً 2 لاکھ روپے ہے۔عمران خان نے وزیر اعظم کی حیثیت سے کوئی کیمپ آفس بنایا ہے نہ ہی ذاتی رہائش گاہ پراخراجات کیے ہیں،بنی گالا ہویازمان پارک،ان جگہوں پر سیکیورٹی کے لیے خار دار تار کے اخراجات بھی خود برداشت کیے ہیں۔انہوں نے 42 لاکھ روپے کی لاگت سے بنی گالہ کی سیکیورٹی اور خاردار تار بھی خود لگوائیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں