shehbaz family notices cancel by NAB 73

چیئرمین نیب نے شہباز شریف کی اہلیہ اوربیٹیوں کے طلبی نوٹسز منسوخ کردیے

لاہور: قومی احتساب بیورو (نیب) کے سربراہ جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے منی لانڈرنگ کیس میں شہبازشریف کی اہلیہ اوربیٹیوں کےطلبی نوٹسزمنسوخ کردیے۔چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے نیب لاہور کا دورہ کیا جہاں ڈی جی نیب لاہورشہزاد سلیم نےانہیں شریف فیملی کے کیسز کےحوالے سےتفصیلی بریفنگ دی۔نیب لاہورکےمطابق چیئرمین نیب نے نصرت شہباز،رابعہ عمران اورجویریہ علی کو طلب کرنے کے نوٹسز منسوخ کرتے ہوئے گھر پر سوال نامہ بھجوانے کےاحکامات جاری کردیےجوآج ہی شریف فیملی کو بھجوائے جائیں گے۔ جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے شریف فیملی کے تمام کیسز کی براہ راست نگرانی خود کرنےکا فیصلہ بھی کیا۔اس موقع پرچیرمین نیب نے کہا کہ نیب خواتین کے تقدس، حرمت، عزت اور چار دیواری پرمکمل یقین رکھتا ہے اوراحتساب سب کیلئے کی پالیسی پر سختی سے گامزن ہے، نیب کی کسی سیاسی پارٹی سے وابستگی نہیں۔جاوید اقبال نے کہا کہ نیب خود مختار ادارہ ہے اور دبائوکو بالائے طاق رکھتے ہوئے قانون اورآئین پاکستان کو مد نظر رکھ کر اپنا کام کرتا ہے، نیب کی نظر میں تمام ملزمان برابر ہیں تاہم تمام میگا کرپشن کیسز کو میرٹ اور صرف میرٹ کی بنیاد پر جلد از جلد منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا، نیب کی وابستگی صرف اور صرف ریاست پاکستان سے ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں