مغربی دنیا کو نبیﷺ کی بے حرمتی کا جواب دینا ہو گا، عمران خان

اسلام آباد (جرات نیوز) وزیراعظم عمران خان نے اسلامی ممالک کی تنظیم (او آئی سی) پر زور دیتے ہو ئے کہا ہے ہم اپنے نبیﷺ کی توہین برداشت نہیں کرسکتے، مسلمانوں کی جان بوجھ کر دل آزاری کی جارہی ہے۔مغربی دنیا کو نبیﷺ کی بے حرمتی کا جواب دینا ہو گا، اسلامو فوبیا کے خاتمے کیلئے اجتماعی کاوشوں کی ضرورت ہے، او آئی سی اسلام کے صحیح تشخص کو اجاگر کر کے اسلاموفوبیا ، بنیاد پرستی اور دہشت گردی کو اسلام سے جوڑنے کا سختی سے مقابلہ کرے، دہشت گردی اور انتہا پسندی کا کوئی مذہب نہیں ہوتا۔ اسلامی تعاون تنظیم کے رکن ملکوں کے سفیروں نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی جس میں وزیراعظم عمران خان نے اسلامو فوبیا کے خاتمے کے لئے عالمی سطح پر پاکستان کی کاوشوں سے آگاہ کرتے ہوئے بتا یا کہ میری کوشش مسلم ممالک میں اتحاد ہے، دنیا میں اسلامو فوبیا پہلے سے بڑھ گیا ہے، اسلامو فوبیا کے خاتمے کیلئے اجتماعی کاوشوں کی ضرورت ہے، اسلامو فوبیا سے بین المذاہب نفرت کو ہوا ملتی ہے، شدت پسندی کو اسلام کیساتھ جوڑنے سے مسلمان متاثر ہوتے ہیں، او آئی سی عالمی سطح پر آگاہی پیدا کرنے میں کردار ادا کرے، مغربی ممالک کی حکومتوں اور عوام کو اس معاملے پر ڈائیلاگ کی ضرورت ہے۔عمران خان نے تمام مذاہب کے افراد کی دل آزاری روکنے کیلئے قانونی اقدامات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ او آئی سی اسلام کے صحیح تشخص اور امن کے پیغام کو اجاگر کرے، پاکستان دنیا میں برداشت کے فروغ کیلئے عالمی برادری سے تعاون کیلئے پرعزم ہے، دہشتگردی اور انتہا پسندی کا کوئی مذہب نہیں ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنے پیارے نبی ﷺ کے خلاف کوئی بات برداشت نہیں کریں گے مغربی دنیا کو بتانا چاہتے ہیں کہ آپ ﷺ ہمارے دلوں میں رہتے ہیں مغربی دنیا کو بے حرمتی پر جواب دینا ہو گا جان بوجھ کر مسلمانوں کی دل آزاری کی جارہی ہے ۔ وزیراعظم نے کہا کہ دنیا میں اسلاموفوبیا میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ معاملہ اجاگر کرنے پر او آئی سی کے سفیروں نے وزیراعظم عمران خان سے سے تشکر کا اظہار کیا اور معاملہ اٹھانے کی یقین دہانی کرائی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں