افریقی ممالک کے ساتھ تعلقات کا چینی نمونہ حقیقی ہے، یوگنڈا پارٹی عہدیدار

کمپالا(جرات نیوز)یوگنڈا کی حکمران جماعت قومی مزاحمتی تحریک کے نائب سیکرٹری جنرل رِچرڈٹوڈونگ نے کہاہے کہ فی الحال آپ یوگنڈا کے ایک کونے سے دوسری سرحد تک سڑ کوں پر سفر کرسکتے ہیں جوکہ خاص طور پرچینی کمپنیوں نے تعمیر کی ہیں۔ٹوڈونگ نے شِنہوا کوحالیہ انٹرویو میں بتایاکہ معیشتوں نے بیلٹ اینڈ روڈ انیشی ایٹوکو اپنایا ہے کیونکہ یہ لوگوں کو جوڑتا ہے اور یہی اس کی خوبصورتی ہے۔سینئرعہدیدار نے کہا کہ کمیونسٹ پارٹی آف چائنہ(سی پی سی) کی قیادت نے افریقہ اور تیسری دنیا کے ممالک کے ساتھ تعلقات میں دوراندیشی دکھائی ہے،انہوں نے واضح کیاکہ افریقی ممالک کے ساتھ چینی تعلقات کا نمونہ ٹھوس ہے۔ٹوڈونگ نے کہاکہ ہم نے دیکھا ہے کہ افریقہ کی زیادہ معیشتوں، خاص طور پر ذیلی صحاراافریقہ میں چین بنیادی ڈھانچے کے منصوبوں پر کام کررہاہے،وہ ڈیمز اورسڑکوں کی تعمیر کررہے ہیں اور دیہی علاقوں تک بجلی بڑھارہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ چینی آئے اور ہمارے لئے متعدد ڈیمز تعمیر کئے جس سے ہم اپنے ملک کو توانائی دینے کے قابل ہوگئے۔پارٹی عہدیدار نے چینی خصوصیات کی حا مل سوشلزم پر عمل کرنے بارے چین کی تعریف کی۔انہوں نے واضح کیاکہ جب ہم اپنی ثقافت بھول رہے ہوں تو تب ہم گلوبل ویلج میں نہیں جاسکتے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں